Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

مسلسل نظر انداز کیے جانے پر خرم منظور نے سلیکشن کمیٹی پر تحفظات کا اظہار کر دیا۔ ایک ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خرم منظور نے سلیکشن پالیسی پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ انگلینڈ لیگ کرکٹ کھیلنے اس لیے نہیں جاتے کہ پاکستان میں پورا فرسٹ کلاس سیزن کھیلیں اور قومی ٹیم میں واپسی کریں لیکن انھیں مسلسل نظر انداز کیا جا رہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہم کس طرح ٹیم میں واپس آ سکتے ہیں؟ ہمارے پاس کوئی تگڑی سفارش نہیں۔
خرم منظور کا مزید کہنا تھا کہ اب تو پاکستان کرکٹ کے حلقوں میں یہ بات عام ہے کہ اگر آپ کے پاس مضبوط سفارش اور سیاسی اثرورسوخ ہے تو پاکستان ٹیم میں آنے سے آپ کو کوئی روک نہیں سکتا۔ دائیں ہاتھ سے کھیلنے والے 32 سالہ اوپنر خرم منظور نے قائداعظم ٹرافی 2018 میں کراچی وائٹس کیلئے 8 میچوں میں 68.15 کی اوسط سے 886 رنز بنائے جس میں 3 سنچریاں بھی شامل تھیں۔