Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

بھارتی حکومت کے شدید دباؤ کا شکار بھارتی بورڈ کا ہنگامی اجلاس بےنتیجہ ختم ہو گیا۔ پاکستان سے ورلڈکپ میں نہ کھیلنے کا کوئی راستہ نہیں نکل سکا۔ ممبئی میں بھارتی بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں وکلاء نے بھارتی بورڈ ارکان کو لال جھنڈی دکھا دی۔ وکلاء نے بھارتی بورڈ کو بتایا کہ قانونی طور پر پاکستان کو ورلڈکپ سے باہر نہیں کیا جا سکتا۔ وکلاء سے مشاورت کے بعد ورلڈکپ میں کھیلنے کا شوشہ چھوڑنے والا بھارتی بورڈ خود پریشان ہو گیا۔
اس کے بعد بی سی سی آئی کے سی ای او راہول جوہری نے آئی سی سی چیف ایگزیکٹو ڈیوڈ رچرڈسن اور چیئرمین ششانک منوہر کو خط لکھا کہ بھارتی ٹیم اور آفیشلز کو ورلڈکپ میں سیکیورٹی خدشات ہیں اس لیے درخواست ہے کہ ایسے ملکوں سے تعلقات ختم کیے جائیں تاہم اس خط میں پاکستان سے نہ کھیلنے کا ذکر تک شامل نہیں۔
اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بھارتی بورڈ کے عہدیدار ونود رائے نے کہا کہ پاکستان سے کھیلنا نہیں چاہتے، آئی سی سی کو بھی آگاہ کریں گے مگر ورلڈکپ میں نہ کھیلنے کا ابھی حتمی فیصلہ نہیں ہوا۔ پاکستان اور بھارت ورلڈکپ میں 16 جون کو مانچسٹر میں ٹکرائیں گے۔