Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

لاہور ہائیکورٹ میں کرکٹر ناصر جمشید کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لیے دائر درخواست کی سماعت ہوئی۔ سماعت میں درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ اسپاٹ فکسنگ میں سزا کے بعد ناصر جمشید کا نام ای سی ایل میں ڈال کر قانون کی خلاف ورزی کی گئی۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ناصر جمشید کا نام ای سی ایل میں ایف آئی اے کی سفارش پر ڈالا گیا۔
ایف آئی اے کے وکیل کا کہنا تھا کہ ای سی ایل میں نام ڈالنا وزارت داخلہ کا اختیار ہے۔ عدالت نے تمام دلائل سننے کے بعد اسپاٹ فکسنگ میں سزا یافتہ کرکٹر ناصر جمشید کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلہ سنایا۔ یاد رہے پی سی بی کے اینٹی کرپشن ٹریبونل نے 17 اگست 2018 کو ناصر جمشید کے خلاف اسپاٹ فکسنگ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے ان پر 10 سال کے لیے کرکٹ کھیلنے پر پابندی عائد کی تھی۔