Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
No live scores available
View All Matches

مکی آرتھر کو 6 مئی 2016 میں پاکستان ٹیم کا ہیڈکوچ مقرر کیا گیا تھا۔ مکی آرتھر کے پاکستان ٹیم کے ساتھ تین سال مکمل ہو گئے ہیں۔ انگلینڈ اینڈ ویلز میں ہونے والا ورلڈکپ مکی آرتھر کی آخری اسائمنٹ ہے۔ میگا ایونٹ میں قومی ٹیم کی کارکردگی کو دیکھتے ہوئے پی سی بی ان کے معاہدے میں توسیع کے بارے میں فیصلہ کرے گا۔
مکی آرتھر کئی مرتبہ اس خواہش کا اظہار کر چکے ہیں کہ وہ ورلڈکپ کے بعد بھی پاکستان ٹیم کا ہیڈکوچ رہنا چاہتے ہیں لیکن اس کا انحصار قومی ٹیم کی ورلڈکپ پرفارمنس پر ہو گا۔
پاکستان ٹیم کے ہیڈکوچ کے حیثیت سے ان کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے تو پاکستان نے ٹی ٹوئنٹی میں شاندار کارکردگی دکھاتے ہوئے رینکنگ میں نمبرون پوزیشن حاصل کی۔ قومی ٹیم نے 30 میچز جیتے اور سات میں شکست ہوئی۔ ون ڈے فارمیٹ میں پاکستان ٹیم کی کارکردگی ملی جلی رہی۔ شاہینوں نے مکی آرتھر کہ تین سالہ دور میں 27 میچز جیتے جبکہ 27 میں شکست ہوئی۔
مکی آرتھر کے زیرسایہ پاکستان نے ٹیسٹ فارمیٹ میں انتہائی ناقص پررفامنس کا مظاہرہ کیا۔ قومی ٹیم نے صرف 10 میچز جیتے جبکہ 17 میں شکست کا مزہ چکھا اور ایک میچ بغیر کسی نتیجے کے ختم ہوا۔ پاکستان ٹیسٹ ٹیم اپنی گزشتہ شاندار پرفارمنس کی وجہ سے ان کے دور میں نمبرون ٹیسٹ ٹیم بھی بنی تھی۔