Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

پاکستان کے سابق آف اسپنر ثقلین مشتاق نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کو مشورہ دیا ہے کہ مستقبل کے لیے کھلاڑیوں کو تیار کرنے کے لیے انڈر-19 اور اے ٹیموں کے زیادہ سے زیادہ غیرملکی دورے کرائے جائیں۔ ثقلین مشتاق نے کہا کہ اس طرح جب کھلاڑی قومی ٹیم میں آئیں گے تو وہ انٹرنیشنل کرکٹ کے لیے پوری طرح تیار ہوں گے۔
انہوں نے مارنس لبوشین کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ ایشز سیریز میں جب اسٹیو اسمتھ انجرڈ ہوئے تو ان کو موقع دیا گیا جو پوری طرح تیار تھے اور سینیئر ٹیم میں آنے کے بعد انہیں ڈویلپمنٹ فیز سے نہیں گزرنا پڑا۔
سابق آف اسپنر نے پی سی بی کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے آئندہ ایونٹس کے لیے تیاری کرنے کا مشورہ بھی دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مصباح الحق جانتے ہیں کہ مختصر المدتی اور طویل المدتی حکمت علی کے لیے کس چیز کی ضرورت ہوتی ہے۔