Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

اسد شفیق 2010 کے بعد سے پاکستان ٹیسٹ ٹیم کے رکن ہیں لیکن عالمی سطح پر انھیں آج تک اتنی پذیرائی نہیں ملی۔ آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں بھی اسد شفیق نے ٹیم کو مکمل تباہی سے بچایا اور 76 رنز کی اننگز کھیل کر پاکستان کا ٹوٹل 240 رنز تک پہنچانے میں اہم کردار ادا کیا۔
میچ کے بعد گفتگو کرتے ہوئے اسد شفیق سے سوال ہوا کہ آپ نے کئی مرتبہ پاکستان کے لیے زبردست اننگز کھیلیں لیکن آپ کو اتنا ریٹ نہیں کیا جاتا۔ اسد شفیق نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ انڈرریٹڈ ہونے سے مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا۔
انھوں نے کہا کہ میرے لیے یہی سب سے بڑا اعزاز ہے کہ میں کافی سال سے پاکستان کے لیے کھیل رہا ہوں۔ اسد شفیق نے کہا کہ ابتدائی سیشنز میں پچ اتنی آسان نہیں تھی اور آسٹریلوی بولرز بھی اچھے ایریاز میں گیند کر رہے تھے جس وجہ سے ہمارے بیٹسمینوں کو کھیلنے میں دشواری ہوئی۔