Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
No live scores available
View All Matches

سری لنکا کی کرکٹ ٹیم کے ہیڈکوچ مکی آرتھر کراچی میں پریس کانفرنس کرنے پہنچے تو ان سے سری لنکن ٹیم سے زیادہ پاکستان ٹیم کے حوالے سے سوالات کیے گئے۔ کامران اکمل اور عمر اکمل نے سابق ہیڈکوچ پر الزام لگایا تھا کہ وہ پسند نا پسند کی بنیاد پر کھلاڑیوں کو ٹیم میں شامل کرتے تھے۔
مکی آرتھر نے اکمل برادران کے الزام پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ کسی بھی کرکٹ ٹیم میں پسند نا پسند نہیں ہوتی ہے، ٹیم میں ان کھلاڑیوں کو منتخب کرتے ہیں جو میچ جتوا سکیں، مجھے لگتا تھا کہ عمر اکمل اور کامران اکمل پاکستان ٹیم کو میچ نہیں جتوا سکتے تھے۔
انھوں نے کہا کہ پاکستان کو نوجوان کھلاڑیوں کو تیار کرنا چاہیے، پاکستان میں باصلاحیت نوجوان پلیئرز موجود ہیں، بطور کوچ ان کھلاڑیوں کو ٹیم میں منتخب کیا جاتا ہے جو ٹیم کیلئے بہتر ہوتے ہیں۔
کامران اکمل کی جانب سے ہونے والی تنقید پر مکی آرتھر نے کہا کہ بدقسمتی سے 16 کھلاڑیوں کو خوش نہیں کیا جا سکتا، اسکواڈ سے باہر کھلاڑی کبھی خوش نہیں ہوتے، کوچ کو دوسرے کھلاڑیوں کیلئے پریشان نہیٕں ہونا چاہئے۔
انھوں نے مزید کہا کہ کوچ ان کی فکر کرتا ہے جو ٹیم میں ہوتے ہیں، کوچ ٹیم کے بہتر نتائج کیلئے محنت کرتا ہے اور میں نے ان کھلاڑیوں کا انتخاب کیا جو پاکستان ٹیم کو میچز جتوا سکتے تھے۔
مکی آرتھر نے کہا کہ وہ دل سے پاکستانی ہیں اور پاکستان کے لیے درد رکھتے ہیں۔ دوسرے ٹیسٹ کے حوالے سے مکی آرتھر نے کہا کہ پاکستان کو ہرانا یہاں کسی صورت آسان نہیں، ہمارے بولرز کو بہت اچھی پرفارمنس کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔