Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

اسد شفیق گزشتہ کئی ٹیسٹ سے اچھی فارم میں نظر آرہے ہیں مگر وہ اپنی نصف سنچریاں بڑی اننگز میں نہیں بدل پارہے۔ گزشتہ دس اننگز میں اسد شفیق نے پانچ نصف سنچریاں بنائیں مگر اسے تین ہندسوں میں نہ بدل سکے۔ انھوں نے آخری سنچری دسمبر 2018 میں اسکور کی تھی۔
کراچی ٹیسٹ میں اسد شفیق وکٹ پر سیٹ تھے اور ٹیل اینڈرز کے ساتھ بیٹنگ کررہے تھے کہ اچانک اونچا شاٹ لگاکر 63 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے اور پاکستان ٹیم 191 رنز بناکر آؤٹ ہوگئی۔ میچ کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے اسد شفیق نے اپنی غلطی کا اعتراف کیا۔
انھوں نے کہا کہ رنز ضرور ہورہے ہیں مگر اسے بڑی اننگز میں نہیں بدل پارہا، اگلے میچز میں کوشش کروں گا کہ اچھا آغاز ملے تو اسے بڑی اننگز میں تبدیل کروں۔
مڈل آرڈر بیٹسمین نے اس موقع پر کپتان اظہر علی کی حمایت کی۔ انھوں نے کہا کہ سب جانتے ہیں اظہر علی اس وقت اچھی فارم میں نہیں مگر ہم سب کو انھیں سپورٹ کرنے کی ضرورت ہے۔