Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

طویل دورانیے کی کرکٹ میں لیگ سپنر یاسر شاہ پاکستان کے ٹرم کارڈ سمجھے جاتے ہیں لیکن 2019 میں یاسر شاہ کی کارکردگی بہت ناقص رہی ہے۔ یاسر شاہ نے 2019 میں چار ٹیسٹ میچز کھیلے اور 121.60 کی اوسط سے صرف پانچ ہی وکٹیں حاصل کیں۔ ان چار ٹیسٹ میچوں میں یاسر شاہ کا اکانومی ریٹ بھی 4.54 کا رہا۔
رواں سال انہوں نے ایک میچ ساؤتھ افریقہ کے خلاف کھیلا تھا جس میں کوئی وکٹ حاصل نہیں کی تھی۔ آسٹریلیا کے خلاف دو میچ کھیلے جہاں یاسر شاہ نے 4 شکار کیے اور کراچی ٹیسٹ میں انہیں صرف 3 وکٹیں ملیں۔
یاسر شاہ کے حوالے سے ایک سوال پر قومی ٹیم کے ہیڈکوچ مصباح الحق کا کہنا تھا کہ لیگ اسپنر نے گزشتہ دو سیریز ساوتھ افریقہ اور آسٹریلیا میں کھیلی ہیں، وہاں کی کنڈیشنز اسپنرز کیلئے سازگار نہیں ہوتیں۔
مصباح الحق نے کہا کہ یاسر شاہ ایشیائی کنڈیشنز میں جب میچز کھیلیں گے تو فارم میں واپس آجائیں گے۔ ان کا مزید کہنا تھا یاسر ہمیشہ سے ہمارے لئے میچ ونر رہے ہیں اور امید ہے ان کی فارم جلد بحال ہوجائے گی۔