Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

ٹی ٹوئنٹی لیگز میں آئے روز کرپشن، میچ فکسنگ اور دیگر جرائم کے بارے میں نئے کیسز سامنے آ رہے ہیں۔ ایسے میں پاکستان کرکٹ بورڈ اس تمام صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار ہو گیا ہے۔
رواں برس ہونے والی پی ایس ایل کو کرپشن سے پاک رکھنے کے لیے سخت اقدامات کیے جائیں گے۔ ایونٹ میں پاکستان کرکٹ بورڈ کا اینٹی کرپشن اینڈ سیکیورٹی یونٹ فرائض سر انجام دے گا۔
پی ایس ایل کے پانچویں ایڈیشن میں ہر ٹیم کے ساتھ انٹیگریٹی آفیسرز کا تقرر کیا جائے گا جو ہر وقت کھلاڑیوں پر نظر رکھیں گے۔ فکسنگ یا مشکوک روابط کی اطلاع نہ کرنے والوں کو ملکی اینٹی کرپشن کوڈ کے تحت سخت سزائیں دی جائیں گی۔
اس کے ساتھ ہی ایونٹ سے قبل آئی سی سی قوانین کے مطابق اینٹی کرپشن آفیسرز، ٹیموں کے پلیئرز، آفیشلز اور فرنچائز مالکان کو بھی بریفنگ دی جائے گی۔
دبئی، شارجہ اور ابوظہبی میں ہونے والے گزشتہ ایڈیشنز میں آئی سی سی کی بھی مدد لی گئی تھی مگر اس مرتبہ پورا پی ایس ایل پاکستان میں ہونے کے باعث مکمل طور پر نگرانی پی سی بی ہی کرے گا۔