Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

ٹیسٹ کرکٹر ناصر جمشید کو اسپاٹ فکسنگ کیس میں سزا سنا دی گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ناصر جمشید کو دو ساتھیوں یوسف انور اور محمد اعجاز سمیت 17 ماہ جیل کی سزا دی گئی ہے۔ برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے تحقیقات کے بعد گزشتہ برس فروری میں ناصر جمشید اور ان کے ساتھیوں کو اسپاٹ فکسنگ کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔
تینوں پر الزام تھا کہ انہوں نے بنگلہ دیش پریمیر لیگ 2016 اور پاکستان سپر لیگ 2017 میں کھلاڑیوں کو فسکنگ کے لیے اکسایا۔ پی ایس ایل اور بی پی ایل میں اوپننگ بیسٹمینوں کو بھاری رقم کے عوض اوور کی پہلی دو گیندوں پر رن نہ بنانے پر راضی کیا گیا۔
مانچسٹر کراؤن کورٹ کو بتایا گیا کہ فی میچ 30 ہزار پاؤنڈ کی رقم ملوث کھلاڈیوں میں تقسیم ہوتی تھی۔ ناصر جمشید نے شروع میں پی ایس ایل میں رشوت کی تردید کے بعد عدالت میں جرم تسلیم کر لیا تھا۔
گزشتہ برس پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ نے ناصر جمشید پر 10 سال کی پابندی عائد کی تھی۔