Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
No live scores available
View All Matches

پاکستان کو کرکٹ کی دنیا کا عالمی چیمپئن بنے 28 سال گزر گئے۔ ورلڈکپ 1992 میں جاوید میانداد پاکستان کے ٹاپ بیٹسمین اور وسیم اکرم ٹاپ بولر رہے۔ میگا ایونٹ میں پاکستان کا آغاز اچھا نہیں رہا تھا، پہلے 5 میں سے 3 میچوں میں شکست ہوئی تھی جبکہ ایک میچ بارش کی نذر ہوا تھا اور صرف ایک میچ میں فتح ملی تھی۔
اس کے بعد پاکستان فتوحات کے ٹریک پر آیا اور لگاتار 3 میچز جیت کر سیمی فائنل میں جگہ بنائی۔ نیوزی لینڈ نے سیمی فائنل میں پاکستان کو 263 رنز کا ہدف دیا تھا، جاوید میانداد کی 57 اور انضمام الحق کی میچ وننگ 60 رنز کی اننگز نے پاکستان کو فائنل میں پہنچانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔
فائنل میں پاکستان کا مقابلہ انگلینڈ سے تھا اور قومی ٹیم نے پہلے کھیلتے ہوئے 249 رنز بنائے۔ جواب میں انگلش ٹیم 227 رنز پر ڈھیر ہو گئی اور یوں پاکستان پہلی مرتبہ کرکٹ کا عالمی چیمپئن بنا۔
ایونٹ میں نیوزی لینڈ کے مارٹن کرو 456 رنز بنا کر پہلے اور جاوید میانداد 437 رنز بنا کر دوسرے کامیاب بیٹسمین ثابت ہوئے تھے۔ وسیم اکرم 18 وکٹوں کے ساتھ ایونٹ کے ٹاپ بولر رہے تھے۔