Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
No live scores available
View All Matches

سابق وکٹ کیپر بیٹسمین راشد لطیف نے کہا ہے کہ انضمام الحق اور مشتاق احمد میرے ساتھ یونائٹیڈ بینک لمٹیڈ کی ٹیم میں کھیلتے تھے، انضمام کو پہلے گلی کرکٹ میں اپنی فٹنس ثابت کرنا پڑی تھی کیونکہ کوئی بھی یہ بات تسلیم کرنے کو تیار نہیں تھا کہ وہ اچھا کھلاڑی ہیں۔
راشد لطیف نے انکشاف کیا کہ لوگ انضمام الحق کو پرچی کے نام سے پکارتے تھے لیکن ورلڈکپ 1992 کے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ کے خلاف شاندار کارکردگی نے راتوں رات اس کا کیریئر تبدیل کر دیا۔
اس حوالے سے انضمام الحق نے بتایا کہ میں نے سیمی فائنل سے پہلے مشتاق احمد سے کہا کہ عمران خان کو بتاؤ میں میچ نہیں کھیل سکتا کیونکہ میری طبیعت ٹھیک نہیں لیکن عمران خان نے انکار کرتے ہوئے کہا کہ تم ہر صورت کھیلو گے۔
انضمام الحق نے نیوزی لینڈ کے خلاف سیمی فائنل میں 263 رنز کے تعاقب میں 37 گیندوں پر 60 رنز کی برق رفتار اننگز کھیل کر پاکستان کی فائنل میں رسائی کو ممکن بنایا تھا۔