Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

بھارت کے سابق آل راؤنڈر عرفان پٹھان نے اپنے ایک بیان میں انکشاف کیا ہے کہ 04-2003 کے دورہ پر جاوید میانداد نے میرے بارے میں ایک بیان دیا تھا جس وجہ سے میرے والد افسردہ ہو گئے تھے۔ جاوید میانداد اس وقت پاکستان ٹیم کے کوچ تھے اور انہوں نے کہا تھا کہ عرفان پٹھان جیسے باؤلرز پاکستان کی گلیوں میں مل جاتے ہیں۔
جاوید میانداد کے اس بیان کے بعد عرفان پٹھان کے والد نے شدید ناراضگی کا اظہار کیا تھا اور وہ ٹیسٹ سیریز ختم ہونے کے بعد پاکستان ٹیم کے ڈریسنگ روم میں جاوید میانداد سے ملنا چاہتے تھے۔
عرفان پٹھان نے بتایا کہ مجھے اب بھی یاد ہے میرے والد آخری میچ دیکھنے پاکستان آئے تھے، انہوں نے مجھے بتایا کہ وہ جاوید میانداد سے ملیں گے لیکن میں نے ان سے کہا کہ میں نہیں چاہتا کہ آپ وہاں جائیں۔
سابق کرکٹر کے مطابق جب جاوید میانداد نے میرے والد کو دیکھا تو انہوں نے کہا کہ میں نے آپ کے بیٹے کے بارے میں کچھ نہیں بولا جس پر میرے والد نے ان سے کہا کہ میں آپ کو کچھ کہنے نہیں آیا، میں آپ سے ملنا چاہتا تھا کیونکہ آپ اچھے کھلاڑی تھے۔