Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

پاکستان کے سابق کپتان رمیز راجہ اور بھارت کے سابق کرکٹر سنجے منجریکر نے ایک انٹرویو میں بات چیت کرتے ہوئے عمران خان کے کرکٹ کے دنوں کو یاد کیا ہے۔ سنجے منجریکر نے خاص طور پر 1989 میں ہونے والے ایک واقعہ کی یاد تازہ کی۔
سنجے منجریکر نے کہا کہ 1989 میں ہونے والی سیریز کا ایک واقعہ مجھے آج بھی یاد ہے، جب سلِپ کے ایریا میں کیچز ڈراپ ہو رہے تھے تو عمران خان بہت مایوس ہو گئے تھے اور انہوں نے رمیز راجہ سے کہا تھا کہ یار ریمبو تم ڈائیو کیوں نہیں لگا رہے؟
رمیز راجہ نے ورلڈکپ 1992 کے فائنل میں آخری کیچ پکڑا تھا جس حوالے سے انہوں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان بولنگ کر رہے تھے، وہ کیچ بہت آسان تھا اور جب وہ کیچ میری طرف آیا تو عمران بھائی زور سے چلائے کہ کیچ پکڑو ریمبو اور میں کیچ پکڑنے میں کامیاب ہوا۔
سنجے منجریکر نے عمران خان کی کرکٹ پر توجہ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ 1989 سیریز میں چاروں ٹیسٹ میچز ڈرا ہو گئے تھے لیکن اس بیزار سیریز میں بھی عمران خان پوری توجہ سے کرکٹ کھیل رہے تھے۔