Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

پاکستان ٹیم کے سابق فاسٹ بولر محمد زاہد نے ملک میں مسلسل ٹیلنٹ کو ضائع کرنے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ اپنے ایک انٹرویو میں محمد زاہد نے کہا کہ پاکستان میں ٹیلنٹ تو ہے مگر ٹیلنٹ کو برباد کرنے کا ٹیلنٹ زیادہ ہے۔
محمد زاہد نے اپنی مثال دیتے ہوئے کہا کہ میرے ساتھ بہت سیاست ہوئی، ایک مرتبہ ویزے کے مسئلے میں پھنسنے کی وجہ سے پریکٹس سیشن میں دیر سے پہنچا تو مجھ پر پابندی لگا دی، اس کے بعد میں نے سوچا کہ اب کرکٹ تو کھیلتا رہوں گا مگر پاکستان کی طرف سے نہیں کھیلوں گا۔
اپنے ڈیبیو ٹیسٹ پر 11 وکٹیں لینے والے محمد زاہد پانچ ٹیسٹ میچوں میں 15 اور 11 ون ڈے میچوں میں 10 وکٹیں لے سکے۔ وہ پاکستان کی طرف سے صرف 16 انٹرنیشنل میچز ہی کھیل سکے۔
محمد زاہد نے بولرز کو ریورس سوئنگ کی تکنیک بتاتے ہوئے کہا کہ آج کل کے بچے گیند کا خیال نہیں رکھتے اس لیے ریورس سوئنگ کم ہوتی جا رہی ہے، گیند جب تک ایک طرف سے کھردری اور دوسری طرف سے چمکے گی نہیں تو اس وقت تک ریورس سوئنگ نہیں ہو گی۔