Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
View All Matches

پاکستان کی جانب سے 21 ٹیسٹ اور 147 ون ڈے میچز کھیلنے والے اظہر محمود اپنے کیریئر سے مطمئن نہیں ہیں۔ ایک انٹرویو میں گفتگو کرتے ہوئے اظہر محمود نے کہا ہے کہ کرکٹ کیریئر میں وہ سب کچھ حاصل نہیں کیا جو کر سکتا تھا۔
انہوں نے بتایا کہ 1997 سے 2000 تک میرا کیریئر بہترین چلا، اس کے بعد کپتانی کی باتیں ہونے لگیں لیکن میں کپتانی کرنے کا خواہشمند نہیں تھا جس کے بعد میری کارکردگی کا گراف نیچے بھی چلا گیا۔
اظہر محمود نے انکشاف کیا کہ 2000 میں سنگاپور کے دورے سے قبل مجھے کپتان بنایا جا رہا تھا لیکن میں سمجھتا تھا کہ وقار یونس کا کپتان بننا زیادہ بہتر ہو گا۔ ان کا کہنا تھا کہ کوچنگ کیریئر کا سوچا بھی نہیں تھا لیکن اس میں بھی کامیابی ملی۔
اظہر محمد نے مزید بتایا کہ ورلڈکپ 2019 کے بعد مجھے معلوم تھا کہ کنٹریکٹ میں توسیع نہیں ہو گی لیکن مکی آرتھر کو امید تھی کہ پی سی بی ان کے کنٹریکٹ میں توسیع کرے گا۔