Recently Finished
Live Cricket
Upcoming Matches
No live scores available
View All Matches

سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے قومی ٹیم کے نوجوان فاسٹ بولرز کے ساتھ لائیو سیشن میں گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں اپنی رفتار کی وجہ سے قومی ٹیم میں نہیں آیا تھا، جب میں ٹیم میں آیا تو ایسے سات بولرز تھے جو مجھ سے بھی زیادہ تیز بولنگ کرنے کی صلاحیت رکھتے تھے، ان بولرز میں وقار یونس اور وسیم اکرم شامل نہیں تھے لیکن مجھ میں اور ان فاسٹ بولرز میں یہ فرق تھا کہ وہ بڑا بننا نہیں چاہتے تھے۔
شعیب اختر نے نوجوان فاسٹ بولرز کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ کی آپ لوگوں کو خود کو برانڈ بنانا ہے جو پاکستان کرکٹ ٹیم کو لمبے عرصے تک چلا سکے۔ شعیب اختر کا موجودہ فاسٹ بولرز سے کہنا تھا کہ خود میں دن بہ دن بہتری لانی ہو گی جس کے لیے محنت اور پریکٹس بہت ضروری ہے جبکہ کریز کا استعمال کرنا ہو گا۔
انہوں نے مزید کہا کہ دنیا ٹیسٹ کرکٹ کی پرفارمنس کو یاد رکھتی ہے، چار-پانچ ماہ بعد جب کرکٹ بحال ہو گی تو جس طرح چھوڑ کے گئے تھے اسی طرح نہیں آ جانا بلکہ خود میں بہتری لے کر آنا۔